Grils Hijab Banned in Austria 1

آسٹریا میں لڑکیوں کے حجاب پر پابندی لگا دی گئی

آسٹریا کی پارلیمنٹ نےمتفقہ طور پر پرائمری اسکولز میں خواتین کے حجاب پر پابندی کا بل منظور کرلیا ہے۔

یورپی خبر رساں ادارے کے مطابق یورپین ملک آسٹریا کی پارلیمنٹ نے پرائمری اسکولز میں خواتین کے حجاب پر پابندی لگانے کے فیصلہ کے ساتھ ساتھ بل بھی منظور کرلیا ہے، حکومتی جماعت اور اتحادیوں کی طرف سے پیش کئے گئے بل کے حق میں ووٹ ڈالے گئے، اس کے برعکس اپوزیشن جماعتوں نے بل کی مکمل مخالفت کی، لیکن ذیادہ ووٹ حاصل کرنی کی وجہ سے بل پاس ہو گیا۔ یہ کوئی نئی بات نہیں ہے، آئے روز کسی نہ کسی ملک میں ایسا ہوتا رہا ہے، حیرت انگیز طور پر مسلم ممالک میں بھی ایسی پابندیاں کئی بار دیکھی گئی ہیں، جن میں ترکی سرفہرست ہے۔

آسٹریا نے اس پابندی کے حولے سے ایک نئی منطق پیش کی ہے کہ پوری دنیا میں جاری اسلامک فوبیا کے پیشِ نظر مسلم مخالف تاثر سے بچنے کے لیے اس بل کو لایا گیا ہے، تام بل میں مزید کہا گیا ہے کہ یہ پابندی صرف مسلمانوں پر ہی نہیں بلکہ ہر اس مذہب پر لگائی گئی ہے جس میں سر کا ڈھانپنا شامل ہے۔ آسٹرین حکومت کا مزید کہنا ہے کہ حجاب کی اس پابندی کا اطلاق سکھ برادری اور یہودیوں کی ٹوپی پر نہیں ہوگا۔ بل کی منظوری کے فوراََ بعد آسٹریا کی مسلم اتحاد کی تنظیموں نے شدید رد عمل کا اظہار کیا ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں