Pakistani rupee became Asia's poorest currency 1

پاکستانی روپیہ ایشیا کی کمزور ترین کرنسی بن گئی

پاکستان کی معیشت مسلسل بدحالی کی شکار ہے اور سٹاک مارکیٹ کے ساتھ ساتھ روپیہ بھی مسلسل اپنی قدر کھو رہا ہے۔
عالمی جریدے بلوم برگ نے اب اپنی رپورٹ میں پاکستانی روپیہ کو ایشیا کی بدترین کرنسی قرار دے دیا ہے۔ بلوم برگ کی رپورٹ کے مطابق پاکستانی کرنسی اب افغانستان، نیپال اور بنگلادیش سے بھی زیادہ بدحال ہو گئی ہے۔

امریکی نیوز جریدے بلوم برگ نے پاکستانی روپیہ کے حولے سے اپنی تازہ رپورٹ میں کہا ہے کہ پاکستان میں ایک ڈالر 151 روپے تک جا پہنچا ہے جبکہ پاکستان کے مقابلہ میں دیگر ایشائی ممالک کی کرنسی پاکستان سے بہتر ہے۔ حتٰی کہ افغانستانی کرنسی پاکستان سے بہتر ہے، ایک ڈالر میں 79 افغانی ملتے ہیں، بنگلہ دیش میں ایک ڈالر 84 ٹکے کے برابر ہے، جبکہ نیپال میں ایک ڈالر میں 112 روپے مل جاتے ہیں، اس کے ساتھ ساتھ تھائی لینڈ میں ایک ڈالر 32 بھات کا ہے، بھوٹان میں ایک ڈالر 69 گلٹرم کا ہے، اس کے علاوہ بھارتی روپیہ بھی پاکستان سے بہتر ہے۔

One Dollar = 151 Pakistani Rupees
One Dollar = 70 Indian Rupee
One Dollar = 79 Afghani
One Dollar = 84 Bangladeshi Taka

روپیہ کی بدحالی مئی 2018 سے جاری ہے اور اب تک روپیہ اپنی 29 فیصد قدر کھو چکا ہے ، اور یہ بدحالی اب تک جاری ہے اور خیال کیا جا رہا ہے کہ ڈالر 170 روپے تک جائے گا۔ یہاں آپکو یہ بھی یاد دلاتے چلیں کہ پاکستان میں جب تحریکِ انصاف کو اقتدار ملا تب ڈالر 124 روپے 50 پیسے کا تھا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں