8

غلط انجیکشن سے وفات کرنے والی ننھی نشوہ کیلئے شوبز ستارے بھی اشکبار

گزشتہ دنوں کراچی میں 9 ماہ کی بچی کاغلط انجیکشن لگنے کی وجہ سے71 فیصد دماغ کام کرنا چھوڑ گیا تھا اور آج ننھی نشوہ ہسپتال میں اپنے خالقِ حقیقی سے جا ملی۔ ننھی نشوہ کے انتقال پرفنکاروں نے نہ صرف گہرے افسوس کا اظہار کیا بلکہ اسپتال انتظامیہ کی غفلت اور لاپرواہی پر نہایت برہمی بھی دکھائی اورحکومت سے مجرمان کو سخت سزا کی درخواست کی۔

مشہوراداکار فیصل قریشی نے ننھی نشوہ کی موت پرگہرےافسوس کا اظہار کرنے کے ساتھ اسپتال انتظامیہ کی غفلت پر برہمی دکھاتے ہوئے کہا، کہ پتہ نہیں اور کتنے بچے لاپرواہی کی نظر ہوتے رہیں گے، کوئی جوابدہ ہے۔

Faisal Qureshi Tweet For Nishwa

اداکارہ ارمینا رانا خان نے ننھی نشوہ کی وفات پر اظہارِافسوس کرتے ہوئے نشوہ کے لیے دعا کی اورکہا کہ نشوہ جنت کے اعلیٰ مقام پرفرشتوں کے ساتھ کھیلے۔ اس کے ساتھ ساتھ انہوں نے نشوہ کے والدین کے لیے صبرکی دعا کرتے ہوئے کہا کہ والدین کے لیے دنیا میں سب سے بدتر چیز ان کی اپنی اولاد کو قبر میں اتارنا ہے۔

Armeena Rana Khan Tweet for Nishwa

نیوز کاسٹر ماریہ میمن نے اپنے غصے کا اظہار کچھ ان الفاظ میں کیا “لعنت ہو اس پر جس نے اس باپ سے اولاد چھین لی اور ان تمام لوگوں پر بھی جو اس مافیا کی پشت پناہی کر رہے ہیں”

Maria Memon Tweet For Nishwa

اداکارعلی رحمان خان نے ننھی نشوہ کی وفات پر پاکستان میں صحت کے مراکزمیں برتی جانے والی لاپرواہی پرنہایت غصے کا اظہارکرتے ہوئے وزیراعظم عمران خان اور حکومت سے ان معاملات کے خلاف سخت سے سخت ایکشن لینے کی درخواست کی ہے۔

Ali Rehman Khan Tweet for Nishwa

اداکارہ منشا پاشا نے اسپتال کی غفلت برتنےپر سخت الفاظ میں کہا کہ صحت مند زندگی سب سے بڑی دولت ہے لیکن آج ڈاکڑوں نے صحت کو صرف پیسے بنانے کا ایک ذریعہ بنا لیا ہے۔ نشوہ کی تصویر نے میرا دل توڑدیا، خدا ننھی نشوہ کو جنت میں اعلیٰ مقام عطا کرے اور اس کے والدین کو ہمت و صبر دیں۔

Mansha Pasha Tweet for Nishwa

علی گل پیرجو گلوکار ہیں نے کہا کہ ننھی نشوہ کے روپ میں ہم نے ایک خوبصورت زندگی کھودی ہے اوریہ سب کچھ اسپتال انتظامیہ کی مجرمانہ غفلت کو نظر انداز کرنے کے باعث ہوا ہے، امید ہے نشوہ کے والدین کو جلد انصاف ملے گا۔

Ali Gul Pir Tweet for Nishwa

اداکارہ نادیہ جمیل نے بھی ننھی نشوہ کی وفات پرافسوس کا اظہارکرتے ہوئے اسے اسپتال کی مجرمانہ غفلت قراردیا۔

اس کے علاوہ دیگر اداکاروں اور خاص طور پرعوام نے بھی سندھ گورمنٹ اور اسپتال انتظامیہ کے ساتھ ساتھ ڈاکٹروں کو بھی سخت تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ حکمرانوں کے اپنے بچے تو باہرکے ملکوں میں علاج کروا تے ہیں، جس دن ان حکمرانوں کے اپنے بچے اس ظلم کا شکار ہونگے اس دن انکو ہوش آئے گا اور ان ظالم، نااہل ڈاکڑوں کے خلاف کوئی ایکشن لیں گے۔ مزید عوام نے سوشل میڈیا پر اپنے غصے کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ آجکل ڈاکٹروں نے اسے بس ایک پیشہ بنا لیا ہے نہ کہ خدمتِ خلق اور ان ڈاکروں کا واحد مقصد بو پیسہ کمانا ہے، جتنے ڈاکٹر اس جرم میں شریک ہیں اتنے ہی ہمارے حکمران بھی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں